Home / Socio-political / سوموٹونوٹس؟

سوموٹونوٹس؟

سمیع اللہ ملک

فلم اورٹیلیویژن کی مشہوراداکارہ اورآل پاکستان مسلم لیگ (مشرف)کی مشیرا طلاعات عتیقہ اوڈھو ۴جون کواسلام آبادسے کراچی جا رہی تھیں ،ایئر پورٹ پران کے سامان کی تلاشی کے دوران دوشراب کی بوتلیں برآمد ہوئیں، ائیر پورٹ کسٹمزنے شراب کوتواپنی تحویل میں لے لیا اور عتیقہ اوڈھوکوکراچی جانے کی اجازت دیدی۔اگلے دن کے اخبارات میں جب یہ خبرشائع ہوئی توملک کی اعلیٰ عدلیہ نے اس پرسومونوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب،ڈیوٹی آفیسر اے ایس ایف اورایف بی آرکے نمائندے کواگلے دن عدالت میں طلب کرلیا۔ عدالت میں پیشی کے موقع پر چیف جسٹس نے عتیقہ اوڈھوکے خلاف مقدمہ قائم کرنے ، انہیں گرفتار کرنے اوران سے قانون کے مطابق سلوک کرنے کاحکم جاری کردیا۔اس حکم کے فوری بعدتھانہ ایئرپورٹ میں عتیقہ اوڈھوکے خلاف پرچہ بھی درج کرلیاگیااوران کی گرفتاری کیلئے ایک ٹیم بھی کراچی روانہ کردی گئی۔سناہے کہ اب وہ اپنے عہدے سے مستعفی بھی ہوگئی ہیں۔

عدالت کایہ فیصلہ انتہائی قابل تحسین ہے کہ ملک میں واقعی سب کے ساتھ یکساں سلوک ہوناچاہئے۔یہ انصاف نہیں کہ پولیس عام شہریوں کے منہ سونگھ کر انہیں فوری حوالات میں ڈال دے اورعتیقہ اوڈھوجیسے بااثرلوگوں کے سامان سے دو شراب کی بوتلیں نکل آئیں اورکچھ حکومتی کارندے اس کوباعزت رہاکرتے ہوئے سفرکرنے کی اجازت دیدیں۔ملک میں ہرطرف اورہرجگہ قانون کی بالادستی ہونی چاہئے اورقانون کی بالادستی کوہرجگہ بلاامتیازلاگوبھی ہوناچاہئے۔محترم چیف جسٹس نے سوموٹوایکشن لیکرملک میں ایک دفعہ پھر قانون کی بالادستی کی ایک بہترین مثال قائم کردی ہے جس پرمیں جناب افتخارچوہدری صاحب کو مبارکبادپیش کرتاہوں لیکن اس کے ساتھ ہی میں بڑے ادب کے ساتھ ملک کی اعلیٰ عدلیہ کی توجہ چنددیگرمعاملات کی طرف بھی مبذول کرواناچاہتاہوں۔

مثلاً پچھلے تین برس اس ملک پربے انتہاخوفناک گزرے ہیں۔پاکستان پر۲۰۰۴ء سے لیکرآج تک مسلسل ڈرون حملے ہو رہے ہیں اوران ڈرون حملوں میں ۲۴۰۰ لوگ جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔شائدہی کوئی دن ایسا ہوجب ان ڈرون حملوں کی ہولناکیاں ہمارے سامنے نہ آتی ہوں لیکن امریکاکوان ڈرون حملوں کی اجازت کس نے دی اورحکومت یہ ڈرون حملے بندکیوں نہیں کروارہی،یہ عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم ہے لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟ ملک میں پچھلے سات برسوں میں۲۳۵ خودکش بم دھماکے ہوئے جن میں اب تک۳۵ہزاربے گناہ پاکستانی شہیدہوچکے ہیں،یہ حملے کیوں ہورہے ہیں اورہماری حکومت ان حملوں کوروکنے میں کیوں ناکام ہے ،یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم ہے لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟

امریکی شہری ریمنڈ ڈیوس نے دن دیہاڑے لاہورکی مشہور زمانہ مصروف سڑک پردوپاکستانیوں پرگولیوں کی بوچھاڑکردی اورریمنڈکے مددگارنے امریکی قونصلیٹ نمبروالی گاڑی سے تیسرے پاکستانی کوکچل کررکھ دیا ،اس کے بعدریمنڈڈیوس کو جس طرح رہا کیاگیااوربغیرپاسپورٹ کے اسی فوری طورپرپاکستان کی حدودسے نکال کرافغانستان پہنچادیاگیا،یہ اب ایک ”کھلی حقیقت “ہے کہ امریکانے اسے ۳۵۰سے زائدبلیک واٹرکی معیت میں پاک افغان سرحدکے قریب جہاں سے وہ دوبارہ پاکستان میں اپنے نیٹ ورک کومتحرک کرنے اور پاکستان کی خودمختاری اورقومی سلامتی کوتباہ کرنے کے خوفناک مشن پرتعینات کردیاگیاہے ،یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم تھا لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیا گیا ؟

فاسق کمانڈو پرویزمشرف نے ملکی سلامتی اورخودمختاری کوداوٴ پرلگاتے ہوئے تربیلہ میں کئی میل کی پٹی پر ہیلی پیڈ اور جہازوں کیلئے رن وے کی سہولت امریکاکے حوالے کردیا ،یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم تھا لیکن آج تک اس پر کوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟اپنے ہی ملک کے شہریوں کوقتل کرنے کیلئے امریکاکوڈرون حملوں کیلئے پسنی اور دیگر ہوائی اڈے استعمال کرنے کی اجازت دی ،یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم تھا لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟

۲مئی کے واقعے نے پاکستان کوپوری دنیامیں ننگاکردیا،اسامہ بن لادن چھ برس تک ایبٹ آبادمیں ملک کی سب سے بڑی فوجی اکیڈیمی کے پہلومیں چھپارہااورہمارے اداروں کوکانوں کان خبر نہ ہوئی۔۲مئی کوامریکی ہیلی کاپٹرپاکستان کی حدودمیں داخل ہوئے،ہماری سرزمین پر اپنے ایک ہیلی کاپٹرمیں فنی خرابی کی بناء پر پہلے ایک گھنٹہ اس کی مرمت میں گزارا،اس کے بعددوبارہ اپنے مشن کی طرف گامزن ہوئے اوروہاں مشن کی تکمیل کے بعداسامہ بن لادن کی لاش کو اپنے ساتھ لے گئے اوراس کی بھی کسی کوکانوں کان خبرنہ ہوئی کہ امریکانے ہماری خودمختاری اورقومی سلامتی کی دھجیاں اڑا کررکھ دیں اورہمیں امریکی صدرنے اس آپریشن کے بارے میں مطلع کیاجس کوہمارے وزیراعظم نے عظیم فتح اور ہمارے صدرنے اپنی خوشی سے تعبیرکیالیکن قوم کے سخت احتجاج کے بعدفوری طورپرہماری سیاسی اورعسکری قیادت نے اس کوانٹیلی جنس کی ناکامی قراردیتے ہوئے اپنی غلطی کو تسلیم کیا،یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم تھا لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟

۲۲مئی کوپی این ایس مہران میں جوکچھ ہوا،اس نے ساری دنیامیں ہمارے ہماری دفاعی صلاحیت کے امیج کو بری طرح بربادکرکے رکھ دیا،چند دہشتگردوں نے پوری ریاست کوپورے سولہ گھنٹے یرغمال بنائے رکھااورہم ان دہشتگردوں کوگرفتارتک نہیں کرسکے، مرنے والے چار دہشتگردوں کے پوسٹ مارٹم کے بعد پتہ چلاکہ یہ غیرمسلم اورغیرملکی تھے اورایک خبرکے مطابق تین کاتعلق روس سے اورایک بھارت سے تھا لیکن اچانک اس خبر پر پابندی لگاکراس کومحض اس لئے مکمل بلیک آوٴٹ کردیا گیا کہ عوام کی توجہ بھارت سے ہٹ جائے ، یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم تھا لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟

حکومت نے دومتفقہ قراردادوں پرابھی تک عمل نہیں کیا۔۲۲اکتوبر۲۰۰۸ء کوچودہ نکاتی قراردادردی کی ٹوکری میں پھینک دی گئی اور۱۳مئی کی قراردادکوبھی پاکستانی عوام ہوامیں اڑتے ہوئے دیکھ رہے ہیں،اس پارلیمانی قراردادمیں ۲مئی کو ہونے والے واقعے کی تحقیقات کیلئے ایک آزادکمیشن کاقیام تھالیکن وہ کمیشن بننے سے پہلے ختم ہوگیا، یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم تھا لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟

قومی دولت لوٹنے اورکرپشن کے مقدمات میں اعلیٰ عدالت کے پندرہ سے زائدفیصلوں پرابھی تک صدرآصف علی زرداری نے عملدرآمدنہ کرکے عدالت کی توہین کی ، یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم تھا لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟بارہااعلیٰ عدالت کے احکام جاری کرنے کے باوجودنیب کاسربراہ مقررنہیں کیا جا رہا تاکہ کرپشن کے مقدمات کوفی الحال اس وقت تک موٴخررکھاجائے جب تک حالات حکومت کے حق میں ہوجائیں، یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم ہے لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟اکثرغیرملکی پاکستان میں اپنی گاڑیوں پر جعلی نمبر پلیٹ کا استعمال کرکے ملکی قانون کی کھلی خلاف ورزی کے مرتکب پائے جاتے ہیں اورہماری پولیس جب ان کوروکتی ہے تو موجودہ حکومت کے کسی بڑے افسرکے ٹیلیفون پراس کوفوراًچھوڑدیاجاتاہے ،یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم ہے لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟

پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ خودحکومت نے اپنے ہی ملک کی ایک فلاحی ورفاعی کام کرنے والی جماعت الدعوہ اوراس کے اکابرین کواقوام متحدہ سے دہشتگردتنظیم قراردلواکرساری دنیامیں پاکستان کے امیج کوبربادکیااورحکومت آج تک ان کے خلاف کوئی بھی الزام کسی بھی عدالت میں ثابت نہیں کرسکی،یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم تھا لیکن آج تک اس پر کوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟ہمارے اسمبلی ممبران کی ایک خاصی تعداداب بھی جعلی ڈگریوں کی بدولت ملکی دولت کی لوٹ کھسوٹ میں مصروف ہے،جعلی ڈگریوں کی چھان بین کس کے حکم پربندکردی گئی،یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑا جرم ہے لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟ملک میں شوگرمافیانے ملک میں چینی کے ذخیرہ اندوزی کرکے پاکستانی عوام کااربوں روپیہ لوٹ لیااوراب بھی مہنگے داموں فروخت کررہی ہے جبکہ بیشترشوگرملزکے مالکان اسمبلیوں میں براجمان ہیں جنہوں نے اعلیٰ عدالت کے احکام کی کوئی پرواہ نہ کرتے ہوئے کھلی خلاف ورزی کی،یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم ہے لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟

قیام پاکستان سے لیکر ۲۰۰۸ء تک مجموعی طورپراتنے غیرملکی قرضے نہیں لئے گئے جبکہ موجودہ حکومت نے صرف پچھلے تین سالوں میں اس سے کہیں زیادہ غیرملکی قرضے لئے ہیں اورغیرملکی قرضے بالآخرملکی سلامتی اورخودمختاری کوپامال کردیتے ہیں اورنجانے قوم ان غیرملکی قرضوں کابوجھ اتاربھی سکے گی کہ نہیں، یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم ہے لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟ اورملک میں کیاکیانہیں ہورہا،اب کراچی سے خیبر تک پٹرول دستیاب نہیں ہے،اس ملک میں حکومت کے مختلف اداروں کے پاس ۲۲جیٹ طیارے ہیں جودن رات ہوامیں اڑتے رہتے ہیں،حکومتی وزرااوردیگرسرکاری افسران بمعہ اپنے اہل وعیال کے بلٹ پروف گاڑیوں میں گھوم پھررہے ہیں اورحکومت بجٹ میں ایمبولنس اورسائیکل پرٹیکس لگادیتی ہے جبکہ صدراوروزیراعظم کے غیرملکی دوروں پرخرچ ہونے والابجٹ دن بدن بڑھتاچلاجارہاہے اورکرپشن اپنی بلندیوں کوچھورہی ہے،بجلی کی لوڈشیڈنگ نے زندگی کوایک عذاب بنادیاہے،یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم ہے لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟

موجودہ حکومت نے ملک میں مہنگائی میں۲۵۰٪اضافہ کردیا جس سے ملک میں جرائم اور خودکشیوں میں اضافہ ہوگیا،یہ بھی عتیقہ اوڈھوکے جرم سے بڑاجرم ہے لیکن آج تک اس پرکوئی سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیاگیا؟ کیوں نہیں ہورہا؟یہ ہماری عدالت ہے اوراس عدالت کوپوری قوم نے مل کرریاستی جبر سہنے کے بعدآزادکروایاتھا،ہماری آزاد عدلیہ ان جرائم پرکیوں خاموش ہے؟ہم جرائم پیشہ ہاتھیوں کودم سمیت گزرنے کی اجازت دے رہے ہیں لیکن عتیقہ اوڈھوکی انگلی ایک بوتل کی تنگ گردن میں پھنس جاتی ہے توسومونوٹس لینے کی ضرورت پیش آجاتی ہے، کیوں، آخر کیوں ؟؟؟مجھے عتیقہ اوڈھوکے اس عمل پرحکومتی اداروں کے خلاف لئے گئے عدالتی سومونوٹس پرانتہائی خوشی ہوئی ہے اوراس ملک میں انصاف ہوناچاہئے لیکن سب کے ساتھ ہوناچاہئے۔کیاہمیں یہ سوچ کرخاموش ہوجاناچاہئے کہ ہماری عدالتوں کے پاس اپنے احکام کو نافذ کروانے کی قوت نہیں؟اگرایساہے توپھر انصاف توبے معنی ہوجاتاہے اوریقینا ایسا ہی ہے توقوم کیلئے ایک لمحہ فکر ہے اور کیا قوم کوایک مرتبہ پھراپنی عدالتی احکام پرعملدرآمدکروانے کیلئے موجودہ حکومت کے خلاف لانگ مارچ کرناہوگا یاپھر ۲۰۱۳ء تک کسی نئے سیٹ اپ کاانتظارکرناہوگا؟

******

About admin

Check Also

یہ دن دورنہیں

امریکہ نے پاکستان کی سرزمین پر پہلاڈرون حملہ ۱۸جون ۲۰۰۴ء کوکیا۔ یہ حملے قصر سفیدکے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *